قُرآن کی تعلیم

Click for Read in……    ENGLISH         HINDI

آؤ قُرآن کی تعلیم کی بات کرتے ہیں۔ قُرآن کو سمجھنے کی کوشش کریں۔ اور قُرآن کو سمجھانے  کی کوشش کریں۔ اپنے سوالات کے جواب [ بھلے ہی وہ مذہبی، معاشرتی یا سائنسی ہوں] قُرآن سے حاصل کریں، اس کے ساتھ ساتھ چند قرآنی سوالات کے جوابات دینے کے لیے خود کو تیار کریں۔انسان بننے اور انسان ہونے کا علم قُرآن سے حاصل کریں۔ زندگی کو قُرآن میں تلاش کرے اور قُرآن کو زندگی میں تلاش کرے۔

اگر ہم ایک خدا کی بات کریں تو قُرآن سے اس کا راستہ تلاش کریں۔ قُرآن خود ﷲ  کی بھیجی [نازل کی]  ہوئی مقدس کتاب کیسے ہے، اس کا جواب قُرآن ہی سے حاصل کریں۔ دنیا میں دستیاب مقدس کتابؤں اور صحیفوں کو قُرآن مجید کی روشنی میں پڑھنے اور سمجھنے کی کوشش کریں۔

~~~~~~~~~~~~~~~~~~~~~~

رَّبِّ اَعُوۡذُ بِکَ مِنۡ ھَمَزٰتِ الشَّیٰطِیۡنِ ۙ وَ اَعُوۡذُ بِکَ رَبِّ اَنۡ یَّحۡضُرُوۡن ؕ۔

بِسۡمِ اللّٰهِ الرَّحۡمٰنِ الرَّحِيۡمِۙ۔

قُرآن۔       

ذٰ لِكَ الۡڪِتٰبُ لَا رَيۡبَ ۚ فِيۡهِ ۚ هُدًى لِّلۡمُتَّقِيۡنَۙ‏ ﴿۲﴾  الَّذِيۡنَ يُؤۡمِنُوۡنَ بِالۡغَيۡبِ وَ يُقِيۡمُوۡنَ الصَّلٰوةَ وَمِمَّا رَزَقۡنٰهُمۡ يُنۡفِقُوۡنَۙ‏ ﴿۳﴾  وَالَّذِيۡنَ يُؤۡمِنُوۡنَ بِمَۤا اُنۡزِلَ اِلَيۡكَ وَمَاۤ اُنۡزِلَ مِنۡ قَبۡلِكَۚ وَبِالۡاٰخِرَةِ هُمۡ يُوۡقِنُوۡنَؕ‏ ﴿۴﴾  اُولٰٓٮِٕكَ عَلٰى هُدًى مِّنۡ رَّبِّهِمۡ‌  وَاُولٰٓٮِٕكَ هُمُ الۡمُفۡلِحُوۡنَ‏ ﴿۵﴾۔

[Q-02:2-5]

یہ کتاب (قُرآن مجید)! اس میں کچھ شک نہیں، کہ  یہ اُن لوگؤں کے لئیے رہنما ہے۔

١- جو غیب پر ایمان لاتے ہیں، اور آداب کے ساتھ نماز پڑھتے ہیں، اور جو کچھ ہم نے ان کو عطا فرمایا ہے اس میں سے خرچ کرتے ہیں۔

٢- جو کتاب آپؐ پر  نازل ہوئی ہے اُس پر، اور جو کتابیں آپؐ  سے پہلے پیغمبروں پر نازل ہوئیں اُن پر بھی ایمان لاتے  ہیں۔ اور آخرت کا یقین رکھتے ہیں۔

یہی لوگ اپنے پروردگار (کی طرف) سے ہدایت پر ہیں اور یہی نجات پانے والے ہیں ۔


الۤرٰ ࣞ كِتٰبٌ اَنۡزَلۡنٰهُ اِلَيۡكَ لِـتُخۡرِجَ النَّاسَ مِنَ الظُّلُمٰتِ اِلَى النُّوۡرِ ۙ  بِاِذۡنِ رَبِّهِمۡ اِلٰى صِرَاطِ الۡعَزِيۡزِ الۡحَمِيۡدِۙ‏ (۱)  اللّٰهِ الَّذِىۡ لَهٗ مَا فِى السَّمٰوٰتِ وَمَا فِى الۡاَرۡضِ‌ؕ (۲) ۔

[Q-14:1-2]

الٓرٰ۔ اس کتاب کو ہم نے تم پر اس لیے نازل کیا ہے کہ لوگوں کو اندھیرے سے نکال کر روشنی کی طرف لے جاؤ۔  ان کے پروردگار کے حکم سے غالب اور قابلِ تعریف (خدا) کے رستے کی طرف ﴿۱﴾  وہ خدا کہ جو کچھ آسمانوں اور زمین میں ہے سب اسی کا ہے۔ ﴿۲﴾۔

————————————–

قُرآن اور مومن کا رشتہ۔

وَالَّذِيۡنَ اٰمَنُوۡا وَعَمِلُوا الصّٰلِحٰتِ وَاٰمَنُوۡا بِمَا نُزِّلَ عَلٰى مُحَمَّدٍ وَّهُوَ الۡحَقُّ مِنۡ رَّبِّهِمۡ‌ۙ كَفَّرَ عَنۡهُمۡ سَيِّاٰتِهِمۡ وَاَصۡلَحَ بَالَهُمۡ‏ ﴿۲﴾۔

[Q-47:02]

اوروہ جو ایمان لائے اور انہوں نے اچھے کام کیے اورجو کچھ محمّد پر نازل کیا گیا اسپر بھی ایمان لائے حالانکہ وہ ان کے رب کی طرف سے برحق بھی ہے تو الله ان کی برائیوں کو مِٹا دے گا اور ان کا حال درست کرے گا ﴿۲﴾۔


وَالَّذِىۡ جَآءَ بِالصِّدۡقِ وَصَدَّقَ بِهٖۤ‌ اُولٰٓٮِٕكَ هُمُ الۡمُتَّقُوۡنَ‏ ﴿۳۳﴾  لَهُمۡ مَّا يَشَآءُوۡنَ عِنۡدَ رَبِّهِمۡ‌ ؕ ذٰ لِكَ جَزٰٓؤُ الۡمُحۡسِنِيۡنَ ۖۚ‏ ﴿۳۴﴾  لِيُكَفِّرَ اللّٰهُ عَنۡهُمۡ اَسۡوَاَ الَّذِىۡ عَمِلُوۡا وَيَجۡزِيَهُمۡ اَجۡرَهُمۡ بِاَحۡسَنِ الَّذِىۡ كَانُوۡا يَعۡمَلُوۡنَ‏ ﴿۳۵﴾۔

[Q-39:33-35]

اور جو (محمّد ﷺ) سچی بات یعنی قُرآن لاۓ۔ اور جس نے اس سچی بات یعنی قُرآن  کی تصدیق کی وہی مُتّقی ہیں ﴿۳۳﴾  اِن لوگوں کے لیے ان کے رب کے پاس  یہی بدلہ ہے کہ جو کچھ وہ چاہیںنگے وہ موجود ہوگا۔ ﴿۳۴﴾  اور ﷲ ان سے وہ برائیاں دور کر دیگا۔  جو انہوں نے کی تھیں۔ اور ﷲ ان کو ان نیک کاموں کے بدلہ میں اجر دیگا۔ جو وہ کیا کرتے تھے ﴿۳۵﴾۔


فَاِنَّكَ لَا تُسۡمِعُ الۡمَوۡتٰى وَلَا تُسۡمِعُ الصُّمَّ الدُّعَآءَ اِذَا وَلَّوۡا مُدۡبِرِيۡنَ‏ ﴿۵۲﴾  وَمَاۤ اَنۡتَ بِهٰدِ الۡعُمۡىِ عَنۡ ضَلٰلَتِهِمۡ‌ؕ اِنۡ تُسۡمِعُ اِلَّا مَنۡ يُّؤۡمِنُ بِاٰيٰتِنَا فَهُمۡ مُّسۡلِمُوۡنَ‏ ﴿۵۳﴾۔

[Q-30:52-53]

بے شک آپؐ نہ ہی   مُردوں کو سنا سکتے ہیں اور نہ ہی  بہروں کو آواز سنا سکتے ہیں،  جب وہ پیٹھ پھیر کرپھر جائیں ﴿۵۲﴾  اور تم اندھوں کوان کے الٹے راستے سے سیدھے راستہ پر نہیں لا سکتے تم تو بس انہیں لوگوں کو سنا سکتے ہو جو ہماری آیتوں پر ایمان لاتے ہیں سو وہی مسلم  ہیں ﴿۵۳﴾۔


 وَمَنۡ اَظۡلَمُ مِمَّنۡ ذُكِّرَ بِاٰيٰتِ رَبِّهٖ فَاَعۡرَضَ عَنۡهَا وَنَسِىَ مَا قَدَّمَتۡ يَدٰهُ‌ ؕ اِنَّا جَعَلۡنَا عَلٰى قُلُوۡبِهِمۡ اَكِنَّةً اَنۡ يَّفۡقَهُوۡهُ وَفِىۡۤ اٰذَانِهِمۡ وَقۡرًا‌ ؕ وَاِنۡ تَدۡعُهُمۡ اِلَى الۡهُدٰى فَلَنۡ يَّهۡتَدُوۡۤا اِذًا اَبَدًا‏ ﴿۵۷﴾۔

[Q-18:57]

اور اس سے زیادہ ظالم کون ہے جسے اس کے رب کی آیتوں سے نصیحت کی جائے پھر بھی ان سے منہ پھیر لے اور جو کچھ اس کے ہاتھوں نے آگے بھیجا ہے بھول جائے۔  بیشک ہم نے ان کے کانوں میں گرانی (بوجھ ، بہرے) اور  ان کے دلوں پر پردے ڈال دیے ہیں تا کہ وہ  اس [قُرآن] کو  نہ سمجھیں  اور اگر تو انہیں ہدایت کی طرف بلائے تو بھی وہ ہر گز کبھی راہ پر نہ آئیں گے ﴿۵۷﴾۔

————————————

پیغمبر اور مقدس کتاب۔

وَبِالۡحَـقِّ اَنۡزَلۡنٰهُ وَبِالۡحَـقِّ نَزَلَ‌ ؕ وَمَاۤ اَرۡسَلۡنٰكَ اِلَّا مُبَشِّرًا وَّنَذِيۡرًا ‌ۘ‏ ﴿۱۰۵﴾۔

[Q-17:105]

اور ہم نے اس قُرآن کو سچائی کے ساتھ نازل کیا ہے اور وہ سچائی کے ساتھ نازل ہوا۔  اور  [اے محمدؐ]  ہم نے تم کو صرف خوشخبری دینے والا اور ڈر سنانے والا بنا کر بھیجا ہے ﴿۱۰۵﴾۔


وَاَنۡ اَتۡلُوَا الۡقُرۡاٰنَ‌ۚ فَمَنِ اهۡتَدٰى فَاِنَّمَا يَهۡتَدِىۡ لِنَفۡسِهٖ‌ۚ وَمَنۡ ضَلَّ فَقُلۡ اِنَّمَاۤ اَنَا مِنَ الۡمُنۡذِرِيۡنَ‏ ﴿۹۲﴾۔

[Q-27:92]

اور یہ بھی کہہ دو۔ کہ قُرآن پڑھا کرو۔ تو جو شخص راہ راست اختیار کرتا ہے تو اپنے ہی فائدے کے لئے اختیار کرتا ہے۔ اور جو گمراہ رہتا ہے تو کہہ دو کہ میں تو صرف نصیحت کرنے والا ہوں ﴿۹۲﴾۔

————————————-

رسول کا مقصد۔

وَمَا نُرۡسِلُ الۡمُرۡسَلِيۡنَ اِلَّا مُبَشِّرِيۡنَ وَمُنۡذِرِيۡنَ‌ ۚ وَيُجَادِلُ الَّذِيۡنَ كَفَرُوۡا بِالۡبَاطِلِ لِـيُدۡحِضُوۡا بِهِ الۡحَـقَّ‌ وَاتَّخَذُوۡۤا اٰيٰتِىۡ وَمَاۤ اُنۡذِرُوۡا هُزُوًا‏ ﴿۵۶﴾۔

[Q-18:56]

اور ہم جو پیغمبروں کو بھیجا کرتے ہیں تو صرف اس لئے کہ (لوگوں کو خدا کی نعمتوں کی) خوشخبریاں سنائیں اور (عذاب سے) ڈرائیں۔ اور جو کافر ہیں وہ باطل کی (سند) سے جھگڑا کرتے ہیں تاکہ اس سے حق کو پھسلا دیں اور انہوں نے ہماری آیتوں کو اور جس چیز سے ان کو ڈرایا جاتا ہے ہنسی بنا لیا ﴿۵۶﴾۔

————————————-

سلطنت۔

اِنَّ اللّٰهَ لَهٗ مُلۡكُ السَّمٰوٰتِ وَالۡاَرۡضِ‌ؕ يُحۡىٖ وَيُمِيۡتُ‌ؕ وَمَا لَـكُمۡ مِّنۡ دُوۡنِ اللّٰهِ مِنۡ وَّلِىٍّ وَّلَا نَصِيۡرٍ‏﴿۱۱۶﴾۔

[Q-9:116]

آسمانوں اور زمین میں الله ہی کی سلطنت ہے وہی جلاتا ہے اور مارتا ہے اور الله کے سوا تمہارا کوئی دوست اور مددگار نہیں ﴿۱۱۶﴾۔


اَلرَّحۡمٰنُ عَلَى الۡعَرۡشِ اسۡتَوٰى‏ ﴿۵﴾  لَهٗ مَا فِى السَّمٰوٰتِ وَمَا فِى الۡاَرۡضِ وَمَا بَيۡنَهُمَا وَمَا تَحۡتَ الثَّرٰى‏ ﴿۶﴾  وَاِنۡ تَجۡهَرۡ بِالۡقَوۡلِ فَاِنَّهٗ يَعۡلَمُ السِّرَّ وَاَخۡفٰى‏ ﴿۷﴾  اَللّٰهُ لَاۤ اِلٰهَ اِلَّا هُوَ ‌ؕ لَـهُ الۡاَسۡمَآءُ الۡحُسۡنٰى‏ ﴿۸﴾۔

[Q-20:5-8]

رحمٰن جس نےعرش پر قرار پکڑا ﴿۵﴾  جو کچھ آسمانوں میں ہے اور جو کچھ زمین میں ہے اور جو کچھ ان دونوں کے بیچ میں ہے اور جو کچھ (زمین کی) مٹی کے نیچے ہے سب اسی کا ہے ﴿۶﴾  اور اگر تم پکار کر بات کہو، تو وہ تو! چھپے ہوے  بھید اور نہایت پوشیدہ بات کو بھی جانتا ہے ﴿۷﴾ (وہ معبود برحق ہے کہ) اس کے سوا کوئی معبود نہیں ہے۔ اس کے (سب) نام اچھے ہیں ﴿۸﴾۔

————————————

وَاحدہُ لَا شریک۔

قُلۡ يٰۤاَيُّهَا النَّاسُ اِنِّىۡ رَسُوۡلُ اللّٰهِ اِلَيۡكُمۡ جَمِيۡعَاْ ۨالَّذِىۡ لَهٗ مُلۡكُ السَّمٰوٰتِ وَالۡاَرۡضِ‌ۚ لَاۤ اِلٰهَ اِلَّا هُوَ يُحۡىٖ وَيُمِيۡتُ  فَاٰمِنُوۡا بِاللّٰهِ وَرَسُوۡلِهِ النَّبِىِّ الۡاُمِّىِّ الَّذِىۡ يُؤۡمِنُ بِاللّٰهِ وَكَلِمٰتِهٖ وَاتَّبِعُوۡهُ لَعَلَّكُمۡ تَهۡتَدُوۡنَ‏ ﴿۱۵۸﴾۔

[Q-07:158]

اے محمدﷺ کہہ دو! کہ لوگو میں تم سب کی طرف اُس خدا کا بھیجا ہوا رسول ہوں۔ جو آسمانوں اور زمین کا بادشاہ ہے۔ اس کے سوا کوئی معبود نہیں وہی زندگانی بخشتا ہے اور وہی موت دیتا ہے۔ تو ﷲ پرایمان لاؤ۔ اور اس کے رسول پیغمبر اُمّی ﷺ پر جو خدا پر اور اس کے تمام کلام پر ایمان رکھتے ہیں۔ ایمان لاؤ اور ان کی پیروی کرو تاکہ تم ھدایت پاؤ ﴿۱۵۸﴾ ۔


غَافِرِ الذَّنۡۢبِ وَقَابِلِ التَّوۡبِ شَدِيۡدِ الۡعِقَابِ ذِى الطَّوۡلِؕ لَاۤ اِلٰهَ اِلَّا هُوَؕ اِلَيۡهِ الۡمَصِيۡرُ‏ ﴿۳﴾۔

[Q-40:03]

وہ ﷲ! جو گناہ بخشنے والا اور توبہ قبول کرنے والا ہے اور سخت عذاب دینے والا اور صاحب کرم ہے۔ اس کے سوا کوئی معبود نہیں۔ اسی کی طرف لوٹ  کر جانا ہے ﴿۳﴾۔

————————————-

قُرآن کے مطابق! پہلا مذہب اسلام ہے۔

مَا يَاۡتِيۡهِمۡ مِّنۡ ذِكۡرٍ مِّنۡ رَّبِّہِمۡ مُّحۡدَثٍ اِلَّا اسۡتَمَعُوۡهُ وَهُمۡ يَلۡعَبُوۡنَۙ‏ ﴿۲﴾۔

[Q-21:02]

 ان کے پاس کوئی نَئِی نصیحت ان کے پروردگار کی طرف سے نہیں آتی مگر وہ اسے کھیلتے ہوئے سنتے ہیں ﴿۲﴾۔

———————————-

فِرقہ پرستی۔

فَاَقِمۡ وَجۡهَكَ لِلدِّيۡنِ حَنِيۡفًا ‌ؕ فِطۡرَتَ اللّٰهِ الَّتِىۡ فَطَرَ النَّاسَ عَلَيۡهَا ‌ؕ لَا تَبۡدِيۡلَ لِخَـلۡقِ اللّٰهِ‌ ؕ ذٰ لِكَ الدِّيۡنُ الۡقَيِّمُ ۙ  وَلٰـكِنَّ اَكۡثَرَ النَّاسِ لَا يَعۡلَمُوۡنَ ۙ ﴿۳۰﴾  مُنِيۡبِيۡنَ اِلَيۡهِ وَاتَّقُوۡهُ وَاَقِيۡمُوا الصَّلٰوةَ وَلَا تَكُوۡنُوۡا مِنَ الۡمُشۡرِكِيۡنَۙ‏ ﴿۳۱﴾ مِنَ الَّذِيۡنَ فَرَّقُوۡا دِيۡنَهُمۡ وَكَانُوۡا شِيَعًا ‌ؕ كُلُّ حِزۡبٍۢ بِمَا لَدَيۡهِمۡ فَرِحُوۡنَ‏ ﴿۳۲﴾۔

[Q-30:30-32]

تو تم ایک طرف کے ہوکر دین [کے رستے]  پر سیدھا منہ کئے چلے جاؤ۔ [اور]  یہ  ﷲ  کی فطرت (قدرت) ہے  کہ  جس پر اُس نے لوگوں کو پیدا کیا ہے ۔ ﷲ  کی تخلیق  [پیدائیش]   میں تغیر وتبدل نہیں ہو سکتا۔ یہی سیدھا دین ہے لیکن اکثر لوگ نہیں جانتے ﴿۳۰﴾ [مومنو] اُسی (ﷲ) کی طرف رجوع کئے رہو۔ اور اس سے  ڈرتے رہو۔ اور نماز پڑھتے رہو اور اُن مشرکوں میں نہ ہونا ﴿۳۱﴾  کہ  جنہوں نے اپنے دین کو ٹکڑے ٹکڑے کر لیا اور  فرقے فرقے ہو گئے۔ سب فرقے اسی سے خوش ہیں جو اُن کے پاس ہے ﴿۳۲﴾۔

————————————

ﷲ  کا انسانوں کے لیئے  آخرت کا اعلان۔  

وَاتَّبِعُوۡۤا اَحۡسَنَ مَاۤ اُنۡزِلَ اِلَيۡكُمۡ مِّنۡ رَّبِّكُمۡ مِّنۡ قَبۡلِ اَنۡ يَّاۡتِيَكُمُ الۡعَذَابُ بَغۡتَةً وَّاَنۡتُمۡ لَا تَشۡعُرُوۡنَۙ‏ ﴿۵۵﴾۔

[Q-39:55]

اور اس سے پہلے کہ تم پر  اچانک  عذاب آجائے اور تم کو خبر بھی نہ ہو، اِس نہایت اچھی [کتاب]  کی جو تمہارے پروردگار کی طرف سے تم پر نازل ہوئی ہے پیروی کرو ﴿۵۵﴾۔


اَوۡ تَقُوۡلَ لَوۡ اَنَّ اللّٰهَ هَدٰٮنِىۡ لَكُنۡتُ مِنَ الۡمُتَّقِيۡنَۙ‏ ﴿۵۷﴾  اَوۡ تَقُوۡلَ حِيۡنَ تَرَى الۡعَذَابَ لَوۡ اَنَّ لِىۡ كَرَّةً فَاَكُوۡنَ مِنَ الۡمُحۡسِنِيۡنَ‏ ﴿۵۸﴾  بَلٰى قَدۡ جَآءَتۡكَ اٰيٰتِىۡ فَكَذَّبۡتَ بِهَا وَاسۡتَكۡبَرۡتَ وَكُنۡتَ مِنَ الۡكٰفِرِيۡنَ‏ ﴿۵۹﴾۔

[Q-39:57-59]

یا یہ کہنے لگے کہ اگر خدا مجھ کو ہدایت دیتا تو میں بھی پرہیزگاروں میں ہوتا ﴿۵۷﴾  یا جب عذاب دیکھ لے تو کہنے لگے کہ اگر مجھے پھر ایک دفعہ دنیا میں جانا ہو تو میں نیکوکاروں میں ہو جاؤں ﴿۵۸﴾ [خدا فرمائے گا]  کیوں نہیں میری آیتیں تیرے پاس پہنچ گئی تھی   مگر تو نے ان کو جھٹلایا اور تکبّر میں آگیا اور تو کافر بن گیا ﴿۵۹﴾۔

Leave a Reply